عادات کا بہتر زندگی میں عمل دخل

کسی بھی انسان کی کامیابی یا ناکامی کے پیچھے جہاں اور وجوہات ہوتی ہیں، وہیں سب سے زیادہ کردار اس شخص کی عادات کا ہوتا ہے۔ کامیاب انسان کی کامیابی اور ناکام انسان کی ناکامی اس کی عادتوں کی بنا پر اسے ودیت کی جاتی ہے۔ ہم میں سے اکثر اپنی زندگی میں کامیابی کے لیے اہداف کے تعین (Goal Setting) کو بہت اہمیت دیتے ہیں، لیکن میرا ماننا ہے کہ کامیابی کے لیے ہمیں اہداف کے تعین کی بجائے اپنی عادات پر کام کرنا چاہیے۔ کسی سیانے شخص نے کہا تھا :

ناکام لوگوں کے پاس گولز ہوتے ہیں اور کامیاب لوگوں کے پاس سسٹمز

سسٹم سے مراد یہاں پر ہم عادات ہی لیں گے، فرض کیجیے آپ اپنا ایک ہدف طے کرتے ہیں کہ میں روزانہ ورزش کروں گا، اچھی بات ہے لیکن شاید آپ اس پر زیادہ دیر کاربند نہ رہ سکیں۔ اس کے برعکس اگر آپ اپنی عادت پر کام کریں کہ روزانہ صبح اٹھنے کے بعد پہلا کام آپ نے یہ کرنا ہے کہ 10 منٹ کے لیے دوڑنا ہے۔ اب آپ Goal کو ذہن سے نکال دیں اور اس عادت پر کام شروع کردیں تو وہGoal خود بخود ہی پورا ہو جائے گا۔

میں نے پہلے بھی یہ بات کی ہے کہ کامیابی اور ناکامی کچھ بھی نہیں ہوتی، آپ وہی کچھ ہوتے ہیں جو آپ کی عادات ہوتی ہیں۔ آپ اپنے اردو گرد نظر دوڑائیے اور کسی بھی کامیاب شخص کو ذہن میں لائیے، آپ دیکھیں گے کہ اس کی عادات کامیاب لوگوں والی ہیں جس نے اسے کامیاب بنایا ہے۔ وہ ایک ذمہ دار شخص ہو گا، وعدے اور وقت کی پابندی کرنے والا، مطالعے اور خود سے روزانہ کچھ نیا سیکھنے والا (Self Learner)۔ کامیاب لوگوں کی دیگر تمام عادات بھی اس میں آپ کو نمایاں نظر آئیں گی۔ اس کے برعکس ناکام شخص، ناکام لوگوں کی عادات کا مجموعہ ہو گا، سسٹم کا شاکی، ہر چیز کا ذمہ دار دوسروں کو ٹھہرانے والا۔ واضع رہے کہ یہاں میں حقیقی کامیاب اور ناکام لوگوں کی بات کر رہا ہوں نہ کہ ہمارے معاشرے کے کامیابی اور ناکامی کے میعار پر پورا اترنے والے کامیاب اور ناکام لوگوں کی۔

یہ بھی پڑھیں :   1000 روپے ماہانہ والا انٹرنیشنل آن لائن سکول

عادات کی اہمیت کا ادراک ہو جانے کے بعد سوال یہ اٹھتا ہے کہ ہم اپنی عادات پر کیسے کام کریں اور یہ کہ اچھی عادات کو زندگی کا حصہ کیسے بنیائیں؟ اس طرح سے سوال یہ بھی پیدا ہوتا ہے کہ بری عادات سے چھٹکارا کیسے پائیں؟ یہ کام بہت آسان بھی ہے اور بہت مشکل بھی، عادات کو اپنی زندگی کا حصہ بنانا ایک صبر آزما کام ہے اور اس ویب سائیٹ پر آنے والے دنوں میں بہت سے مضامین آپ عادات کے موضوع پر دیکھیں گے۔ یہاں پر میں صرف ایک اصول آپ کو بتاتا چلوں جس نے مجھے مختلف اچھی عادات بنانے میں اور ان پر کاربند رہنے میں مدد دی ہے۔ وہ اصول ہے “ایک وقت میں ایک عادت پر کام کرنا”۔ آپ اپنی جو بھی عادات بہتر بنانا چاہتے ہیں ان سب کو لکھ لیں لیکن ان سب کو ایک ہی وقت میں تبدیل کرنے نہ چل پڑیں، تبدیلی راتوں رات نہیں آتی، یہ ایک دیرپا عمل ہے۔ عادات بھی ایک دن میں تبدیل نہیں ہوں گی، اس لیے ایک وقت میں ایک عادت پر بلاناغہ کم از کم ایک ماہ کام کریں، تبھی وہ عادت آپ کی زندگی کا حصہ بنے گی۔

کیا آپ سادہ، آسان اور پُرسکوں زندگی کے خواہاں ہیں؟
اپنا ای میل ایڈریس درج کیجیے اور میرا ہفتہ وار ای میل نیوز لیٹر جوائن کیجیے

احباب کے ساتھ شیئر کیجیے

فیس بک
ٹوئٹر
گوگل پلس
ای میل
فیس بک
ٹوئٹر
گوگل پلس
ای میل

اپنی رائے کا اظہار کریں

error: !!معذرت، کاپی کی اجازت نہیں